وشو ہندو پریشد و بجرنگ دل پر پابندی عائد کی جائے ‘‘۔سوشل ڈیموکریٹک پارٹی

Posted in National

ناندیڑ ، 11 فروری.

(پی ایس آئی)

وشو ہندو پریشد اور بجرنگ دل کی جانب سے اقلیتی طبقہ سے وابستہ قریشی برادری پر کئے جا رہے ظلم کے خلاف سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا ،ناندیڑ نے ضلع کلکٹر کو تحریری محضر پیش کرتے ہوئے فرقہ پرست عناصر پر سخت کاروائی کرنے کامطالبہ کیا ۔تفصیلات کے مطابق ناندیڑ ضلع کلکٹر کے معرفت

وزیر اعلیٰ مہاراشٹر کو دئے گئے محضر میں کہا گیا کہ مہاراشٹر ریاست میں گذشتہ کئی دنوں سے قریش برادری کے ساتھ ظلم و زیادتی کے واقعات رونماء ہو رہے ہیںجس کی وجہ سے مجبوراً قریشی برادری کو اپنے کاروبار بند کرنے کا فیصلہ لینا پڑرہا ہے ۔مہاراشٹر کے کئی ایک مقامات پر وشو ہندو پریشد اوربجرنگ دل کے کارکنان کی جانب سے جانوروںکو لوٹ لینے کے علاوہ مارپیٹ کے واقعات بھی رونماء ہوئے ہیں ۔ایک مخصوص برادری پر اس طرح کا ظلم و جبر فرقہ پرست تنظیمیں دانستہ طور پر کررہی ہیں ۔مہاراشٹر کے نندو بارمیں بھی اسی مسئلہ کو لے کر فرقہ وارانہ فسادرونماء ہواہے ،جس میں مسلمانوں کا جانی اور مالی نقصان ہوا۔پولس کی جانب سے ان فرقہ پرست طاقتوںپر ضرب لگانے کے بجائے مقامی افراد کو ہراساں کیا گیا ۔گوشت فروخت کرکے روز مرہ کی زندگی کاسامان کرنے والی قریشی برادری روز بہ روز ان تکالیف سے کافی پریشان ہو چکی ہے ۔ویجاپور میں جانوروں کی ہڈیو ں سے لدی گاڑی کو جلادئے جانے کا واقعہ بھی گذشتہ دنوں پیش آیا ہے ۔محضر میںکہا گیا کہ فرقہ پرست طاقتیں ریاست کے ماحول کو خراب کرنے کے لئے شر انگیزی کر رہی ہیں ۔دیکھا گیا ہے کہ پولس کی جانب سے بجائے ان فرقہ پرست طاقتوں کو غیر قانونی کام کرنے سے روکے قریشی افراد کے ساتھ یکطرفہ سلوک کیا جا رہاہے ۔قریشی برادری کی جانب سے ناندیڑ میں بھی گوشت کی فروخت کو غیر معینہ طور پر بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے ۔اگر گوشت کی فروخت غیر معینہ طور پر روک دی جاتی ہے تو اس سے ملک کی معاشی صورت حال پر گہرا اثر پڑے گا ۔سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا ناندیڑ ضلع معتمد عمومی ارشاد احمد کی قیادت میں پیش کئے گئے محضر میں کہا گیا کہ اگر ریاستی حکومت اور پولس انتظامیہ ان غیر قانونی اور غیر دستوری واقعات کو رونماء ہونے سے روکنے میںناکام ہوتی ہے اور فرقہ پرست عناصر کے خلاف کوئی سخت کاروائی نہیںکی جاتی ہے تو اس صور ت میں ’گو رکشاء کیندروں ‘ پر ریاست بھر میں دھڑک مورچہ نکالا جائے گا ۔اسی کے ساتھ مختلف جمہوری طریقہ کار کا استعمال کرتے ہوئے احتجاج بلند کیا جائے گا جس کی پوری ذمہ داری انتظامیہ کی ہو گی ۔ایس ڈی پی آئی کی جانب سے مطالبہ کیا گیا کہ ریاست میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو نقصان پہنچانے والی وشو ہندو پریشد اور بجرنگ دل پر پابندی عائد کی جائے ۔ضلع صدر اعجاز احمد شیخ نے قریشی برادری سے اپیل کی ہے کہ وہ قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے کاروبار کریں ،کسی کو کچھ کرنے کا موقع نہ دیں اور اگر کوئی انہیں بے وجہ پریشان کرتا ہے تو وہ ایس ڈی پی آئی کے ذمہ داران سے رجوع ہوں ۔ایس ڈی پی آئی کے وفد میں ضلع سیکریٹری احمرندیم ،ابراہیم خان ، شیخ عبد الکریم ،محمد رفیق ،محمد اسحاق انصاری و دیگر موجود تھے ۔

Блогът Click here очаквайте скоро..

Full premium Here download theme for CMS

Bookmaker Bet365.gr The best odds.